اب سردرد کی دوائیاں کھانا چھوڑیں بلکہ یہ علاج کریں

سر درد ایک انتہائی تکلیف دہ چیز ہے جس کی وجہ سےعموماََ کام کا دبائو، کسی قسم کی پریشانی اور ذہنی دبائو یا ٹینشن ہوتے ہیں۔

سردرد صرف مردوں میں ہی نہیں بلکہ خواتین اور اب تو کم عمر نوجوانوں میں بھی دیکھنے کو مل رہا ہے۔ ہمارے ہاںعموماََ سر درد کیلئے چائے یا کسی میڈیکل سٹور سے علامات بتا کر دوائی حاصل کر لی جاتی ہے جو وقتی طور پر آرام دے دیتی ہےتاہم جیسے ہی اس کا اثر ختم ہوتا ہے سردرد پھر اپنی جگہ آن موجود ہوتا ہے۔ ہم یہاں آپ کو ایسے طریقے بتانے جا رہے ہیں جس کے ذریعے آپ بغیر دوائی یا ڈاکٹر سر درد کا موثر علاج کرسکتے ہیں۔سردرد کی کئی اقسام ہیں کو کو آنکھوں کے اوپری حصہ میں درد کی شکایت ہوتی ہے۔تو کوئی آنکھوں کے اردگرد اسے محسوس کرتا ہے اور کئی افراد کو آدھے سر میں درد کی بھی شکایت کرتے نظر آتے ہیں۔ ایسے افراد جو آنکھوں میں یا ان کے اردگرد درد محسوس کریں تو انہیں چاہئے کہ آنکھوں کے درمیانی حصے یعنی دونوں بھنوئوں کے درمیانی حصے پر ایک منٹ تک دائرہ نما مساج کریں۔

یہ طریقہ آپ کو سرکے درد میں فوری آرام پہنچائے گا۔ آدھے سر کے درد کو طبی اصطلاح میں مائیگرین بھی کہا جاتا ہے ، آدھے سرکے درد سے نجات حاصل کرنے کیلئے سر کے پچھلے حصے میں گردن کے بالکل قریب آپ کو دو گڑھے محسوس ہونگےان پر 5منٹ تک انگوٹھوں کی مدد سے دبائو ڈال کر رکھیں اور یہاں پر ہلکے ہاتھ سے مساج کریں آپ محسوس کریں گے کہ آپ کے سر کا درد غائب ہو چکا ہے۔بچے آدھے سر کے درد کی اذیت میں بھی مبتلا ہو سکتے ہیں۔ عمومی طور پر یہ درد بلوغت میں ہوتا ہے لیکن چھوٹی عمر کے بچے بھی اس میں مبتلا ہو سکتے ہیں۔ ایسے بچے جنہیں درد شقیقہ کی شکایت ہوتی ہے ممکنہ طور پر یا تو ان کے قریبی عزیزوں میں سے کوئی فرد اس میں مبتلا رہ چکا ہوتا ہے یا پھر یہ پیٹ درد اور یا پھر بہت چھوٹی عمر میں بنا کسی وضاحت کے بار بار قے کے مرض میں مبتلا رہ چکے ہوتے ہیں۔آدھے سر کے درد کی شکایت جان نہیں چھوڑتی اس سے مراد یہ ہے کہ یہ بار بار لوٹ آتا ہے۔

اس درد کے شروع ہونے سے قبل کئی دیگر علامتیں پہلے ہی ظاہر ہونا شروع ہو جاتی ہیں۔ درد شقیقہ عمومی طور پر سر کے ایک مخصوص حصے جیسے آنکھ کے پیچھے یا پھر کبھی یہ پورے سر کا ہی گھیراؤ کر لیتا ہے۔جوان عورتوں میں عمومی طور پر یہ ماہواری کے ایام میں اُمڈ آتا ہے۔عام طور پر تیز روشنیوں یا تیز آوازوں میں درد شقیقہ کے مزید بگڑ جانے کا امکان ہوتا ہے۔ تاریک اور خاموش جگہ میں اس میں بہتری آتی ہے۔ اس کے ساتھ اُبکائیاں آنے اور قے کرنے کی شکایت اکثر عام ہوتی ہے۔یہ سر درد کی شدید ترین قسموں میں سے ایک ہے اور اسے برداشت کرنا بے حد مشکل کام ہوتا ہے۔جیسا کہ اس کے نام سے ہی ظاہر ہے کہ یہ کئی دنوں اور ہفتوں تک گچھوں کی شکل میں آتا رہتا ہے۔ اس طرح کے سر درد میں مبتلا شخص کو سال میں اوسطاً عموماً دو مرتبہ اس کا نشانہ بننا پڑتا ہے لیکن ہر شخص میں اس کی کیفیت مختلف ہوتی ہے۔ اس میں ایک سال سے لے کر کئی سال کے عرصے میں ترمیم ہو سکتی ہے۔اس نوعیت کا سر درد عام نہیں ہوتا۔ یہ بے حد اذیت ناک ہوتا ہے تاہم اس سے زندگی کو کوئی خطرہ لاحق نہیں ہوتا اور نہ ہی اسے خطرناک طبی حالتوں سے منسوب کیا جاتا ہے۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو ۔آمین

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.

beylikdüzü escort bahçeşehir escort