اس چٹنی کا ایک چمچ کھائیں پیٹ کی گیس اور قبض کو دور بھگائیں

پیٹ میں گیس کا بھرجانا دراصل اصل جسم میں اضافی ہوا کے بھر جانے کی وجہ سے ہوتا ہے عموما کھانا تیزی سے کھانا یا کھانا کھاتے ہوئے باتیں کرنا ان کے سبب پیٹ میں گیس ہونے کی تکلیف ہوسکتی ہے اگر یہ گیس پیٹ سے خارج نہ ہو تو پیٹ پھولنے کے خطرات بڑھ جاتے ہیں اگر پیٹ میں گیس بھر جائے تو ان کی علامات یہ ہیں کہ مریض کو چکر آنا شروع ہوجاتے ہیں کٹھی ڈکاریں قبض یا اجابت کا غیر تسلی بخش گھبراہٹ منہ سے بدبو مسوڑوں کا پھول جانا یہ تمام علامات پیٹ میں گیس بھر جانے کی وجہ سے ظاہر ہوتی ہیں پیٹ کے مسائل خصوصا درد وغیرہ کے لئے سونف کا استعمال ایک نہایت ہی آزمودہ نسخہ ہے یہ ایک سستی اور آسانی سے دستیاب ہونے والی ایک ایسی چیز ہے جسے کچن کی زینت کہا جائے تب بھی غلط نہیں ہوگا اس لئے گھر میں سونف لازمی رکھنے چاہئیں یہ بچوں کے مختلف امراض کے لئے بہت فائدہ مند ہیں اس کے ساتھ ہاضمے کو درست رکھنے کے لئے الائچی بھی بہت فائدہ مند ہے اس کو سبزیوں اور چاولوں میں ڈال کر استعمال کیاجاسکتا ہے اور اس کے ساتھ ساتھ اس کو چائے یا قہوے میں بھی ڈال کر استعمال کیا جاسکتا ہے دھنیا نہ صرف خوشبو اور ذائقے کے لئے بہترین ہے بلکہ نظام ہاضمہ کو بہتر بنانے کے لئے بہت ہی اہم کردار ادا کرتا ہے

یہ گیس اور ہچکیوں سے نجات دلوانے میں بہت اہم کردار ادا کرتا ہے تو اس کے لئے آپ ادرک پودینہ دھنیا اور انار دانہ ان تمام چیزوں کو مکس کر کے چٹنی بنا لیجئے اور اس کو دو پہر کے کھانے کے ساتھ استعمال کریں انشاء اللہ نہ گیس رہے گی نہ پیٹ پھولے گا ااور قبض بھی دور ہوجائے گی کچھ افراد ایسے ہیں جنہیں ہر وقت قبض رہتی ہے قبض ان کی جان نہیں چھوڑتی اس وجہ سے انہیں زندگی میں بہت مشکل محسوس ہونے لگتی ہے محققین کا کہنا ہے کہ اگر آپ کو اکثر قبض کی شکایت رہتی ہے تو اسے عام سمجھ کر نظر انداز مت کریں تو ایسی صورت میں ثناء مکی کا قہوہ استعمال کریں بہت ہی فائدہ مند چیزہے اس کا طریقہ استعمال یہ ہے کہ کسی برتن میں دو کپ پانی لیں اور اسے چولہے پر رکھ دیں اس میں تھوڑی سے ثناء مکی ڈالیں اور اس کو اچھی طرح پکائیں اور اس کے بعد اس میں حسب ضرورت گڑ ملا کر یا شکر ملا کر استعمال کریں اس کی طب نبوی میں بہت زیادہ فضیلت ہے حضور پاک صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم بھی ایسی صورت میں صحابہ کرام رضی اللہ تعالیٰ عنہ کو ثناء مکی کا علاج تجویز فرماتے تھے ۔آپ یہ چند طریقے آزمائیں انشاء اللہ بہت فائدہ ہوگا ۔

باہر کھانا کھانے کا رواج عام ہو چکا ہے۔ہر خاص وعام بازار کے کھانوں کا شوقین نظر آتا ہے۔جگہ جگہ فوڈ اسٹریٹ قائم ہو چکی ہیں۔جن میں طرح طرح کے کھانے دستیاب ہوتے ہیں۔ہر ویک اینڈ پر باہر جاکر کھانا کھانا سب سے مقبول تفریح بن چکی ہے۔باہر کے کھانے دیکھتے ہی منہ میں پانی بھر آتا ہے لیکن یہ کس طرح تیار ہوتے ہیں اکثر لوگ اس سے نا واقف ہیں۔جب ہم اپنا کھانا خود تیار کرتے ہیں تو اس بات کو یقینی بناتے ہیں کہ اس میں استعمال ہونے والی ہر چیز صاف ستھری اورخالص ہو۔اس کی تیاری میں کوئی مضر صحت چیز شامل نہ ہو۔جب ہم یہی چیز باہر کھاتے ہیں تو وہ اچھی تو بہت لگتی ہے لیکن اس کے صاف ستھراہونے کی کوئی گارنٹی نہیں ہوتی۔فوڈ اسٹریٹ اور ریستورانوں میں تیار شدہ یہ کھانے صحت کے لئے بہت نقصان دہ ہیں۔جو انسانی جسم کو نقصان پہنچانے کا باعث بنتے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.