خوبانی کے بے شمار فائدے

پاکستا ن میں خوبانی خوب ہوتی ہے۔ سوات کی سرخ اور زرد رسیلی خوبانی کے علاوہ کوہستان کی سفید خوشبودار خوبانی بھی لذت اور صحت کی فراہمی کا اہم ذریعہ ہوتی ہے۔ چین کو اسکا  وطن قرار دیا جاتا ہے۔ جہاں اسے صدیوں سے جسم کو زہریلے مادوں سے نجات دلانے اور جسم میں اہم سیالات کی تیاری کےلیے کھایا جارہا ہے۔ تحقیق نے بھی اس خوب صورت پھل کو غذائیت سے بھرپور قرار دیا ہے۔ اسے بڑھاپا روکنے کےلیے بہت مؤثر پھل سمجھا جاتا ہے۔ اس کی گھٹلی او ر گودے دار پھل کی خوشبو اور اس کا میٹھا ذائقہ قدرتی مٹھائی ثابت ہوتاہے۔ اسے چٹنی  اورمربوں کی صورت میں محفوظ کرکے موسم کےبعد بھی مزے لےلے کر کھا یا جاتا ہے۔ تازہ کےمقابلے میں خشک خوبانی زیادہ مزے دار ہوتی ہے ۔ جسے سال بھر کھا کر صحت اور توانائی میں اضافہ کیاجاسکتاہے۔

تازہ اور خشک خوبانی حیا تین اور معدنی نمک، خاص طورپر فولاد کی فراہمی کا اہم ذریعہ ہے۔ اس میں حیاتین الف (وٹامن اے) کے علاوہ حیاتین ج اور ھ(وٹا منز سی اور ای) بھی ہوتی ہیں۔ اس میں موجود فولاد، پوٹاشیم اور بیٹا کیر وٹین جسم میں انحطاط کا عمل سست کرکے بڑھاپا روکتے ہیں۔ یہ ریشہ غذا کے ہضم اورجذب میں اہم کردار ادا کرتا ہے  خوبانی بیماریوں کو دور کرتی ہے۔ جن میں نظر کی کمزوری خاص طور پر قابل ذکر ہے۔ اس کا اہم جز و بیٹا کیروٹین  جو جسم میں جاکر حیاتین الف میں تبدیل ہوجاتا ہے۔ آنکھ کےلیے بہت مفید ثابت ہوتا ہے۔ خوبانی کے غذائی ریشے  سے آنتوں کی حرکت باقاعدہ رہتی ہے۔ اس طرح قبض نہیں ہوتا۔ آنتیں ریشے کی وجہ سے اپنا کام اچھی طرح کرتی ہیں۔ کھانے سے پہلے خوبانی  کھانے سے ہضم کرنے کی صلاحیت بڑھ جاتی ہے۔ قبض کی پرانی شکایت ختم کرنے کے لیے روزانہ اچھے سے آٹھ خوبانیاں کھانا بہت فائدہ مند ثابت ہوتا ہے۔

خوبانی میں فولاد زیادہ ہوتا ہے۔ خ ون کی کمی میں مبتلا افراد کےلیے  خوبانی بہت مفید ہے ۔ اسے کھانے سے خ ون کی کمی کی علامات مثلاً سانس پھولنا، چکر ، سر کا درد اور تھکن دور ہوجاتی  ہے۔ تازہ خوبانی کے رس میں گلوکوز ملا کر پینے سے مریض تازگی اور فرحت محسوس کرتا ہے۔ اس میں گلوکوز کے بجائے شہد بھی شامل کیاجاسکتا ہے۔یہ شربت بخار کی شدت کم کرتا ہے۔ پیاس کی شدت دورکرتا ہے۔ اورجسم سے زہریلے مادے بھی خارج کردیتا ہے۔ دل کے مریض کے لیے مضر کولیسٹرول ایل لائیکو پین خوبانی میں شامل ہوکر لائیکو پین کی سطح کم کرکے شریانوں کو صاف رکھتا ہے۔

واضح رہے کہ ایل ۔ ڈی ۔ ایل لائیکو پین ایک اہم مانع سرطان کے طور پر بھی مفید اورمؤثر تسلیم کرلیا گیا ہے۔ شریانوں کےصاف رہنے سے دل کو لیسٹرول اور دیگر زہریلے اثرات سے محفوظ رہتا ہے۔ اس کےعلاوہ موٹاپا لاحق نہیں ہوتا اور ذیا بیطس  کا خطرہ بھی دورہوجاتا ہے۔ خوبانی قوت مدافعت میں اضافہ کرتی ہے۔ قوت مدافعت کےکم ہوجانے کی صورت میں سرطان جیسا مرض سراٹھاتا ہے۔ خوبانی میں موجود حیاتین اور غذائی ریشہ بھی سرطان کا راستہ روکتےہیں۔ خاص طور  پر آنتوں  میں اس کے ریشے کی وجہ سے سرطان کا سبب بننے والے اجزاء جمع نہیں ہوپاتے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

bullet force multiplayer unblocked shell shockers unblocked