روزانہ ایک گلاس پودینے کا جوس پینے سے آپ کی باڈی میں کیا ہو تا ہے؟

پودینے‘ کو عام طور پر گھروں میں چٹنی کے طور پر استعمال کیا جاتاہے. چٹنی کے ساتھ ساتھ پودینے کا جوس بھی بہت مفید ہے. پودینہ ذائقے میں خوشگوار ہوتا ہے. پودینہ کی لذت اور مہک کے ساتھ ساتھ اس کے بے شمار طبی فوائد ہیں۔ پودینہ کا عرق دل کی کمزوری دور کرتا ہے۔ امراضِ معدہ میں موثر ہوتا ہے. دل اور معدہ کی کمزوری کے لیئے پودینہ کا شربت اور عرق دونوں ہی بہت فائدہ مند ہیں پودینہ کھانے کو زودہضم بنانے کے ساتھ ساتھ معدہ کو ٹھیک رکھتا ہے۔اس کے استعمال سے نہ صرف متلی اور سر دردکا خاتمہ ہوتا ہے بلکہ یہ عمل تنفس سے متعلق تمام خرابیوں مثلاً سینے کی جکڑ، حلق، پھیپھڑے کے انفکیشن کو دور کردیتا ہے۔ پودینے کا روزانہ استعمال دمے کے مریضوں کے لیے بھی نہایت مفید ہے.پودینہ کا جوس انسانی جلد کے لیے بہترین کلینزر کا کام کرتا ہے۔

جس سے چہرے کی جلد فریش نظر آتی ہے اور تمام جلدی بیماریاں مثلاً خارش، چہرے کے کیل مہاسے ختم ہوجاتے ہیں۔پودینہ بھوک بڑھاتا ہے. یہ عمل انہضام کے امراض، جگر کے امراض، قے، اسہال جیسی بیماریوں میں اس کااستعمال فائدہ مند ثابت ہوتا ہے. اور لیمو ں کے رس میں وٹامن سی وافر مقدار میں پایا جاتا ہے.پودینے کے فوائد کے ساتھ ساتھ ہم آج آپ کو پودینے اور لیموں کا جوس بنانا بھی سکھائیں گے.سوڈا واٹرایک بوتل کٹی ہوئی کالی مرچ ایک چٹکی برف ایک پیالی پودینے کی پتیاں ایک پیالی براؤن چینی ایک کھانے کا چمچ کالا نمک آدھا چائے کا چمچ لیموں کا رس چار کھانے کے چمچ پودینے کے پتے سجانے کے لیےترکیب:بلینڈر میں تمام اجزاﺀ کو اچھی طرح یکجان کرلیں۔

– پھر اسے گلاس میں نکال لیں. پودینے کے پتوں سے سجا کر پیش کریں.پودینے کے جوس کو ہلا کر پئیں. پودینے‘ کو عام طور پر گھروں میں چٹنی کے طور پر استعمال کیا جاتاہے لیکن بظاہر عام سی نظر آنے والی اس سبزی کے حیرت انگیز فوائد سامنے آئے ہیں۔ اس کے استعمال سے جلد کی خارش‘ پھوڑے‘ پھنسی اور خون کی خرابی دور ہوجاتی ہے۔ کیونکہ اس کا استعمال خون کو صاف کرتا ہے اس لیے چہرہ اور جسم کی رنگت میں نکھار پیدا ہوتا ہے۔ جسم میں قوت اور حرارت پیدا کرتا ہے‘مٹر کسی بھی طریقہ سے پکا کر کھایا جائے جسم کو غذائیت بہم پہنچاتا ہےمٹر کو عربی میں کرسنہ‘ انگریزی میں فیلڈ پیز کہتے ہیں یہ ایک عام اور ہر جگہ میسر ہونے والی سبزی ہے۔ گوناگوں صفات کی حامل ہے۔

اس میں غذائی اجزا کافی مقدار میں پائے جاتے ہیں۔ اس کو امیر اور غریب‘ بڑے اور چھوٹے‘ ادنیٰ و اعلیٰ‘ سیٹھ اور مزدور سبھی لوگ بڑے شوق سے مختلف طریقوں سے پکاتے اور کھاتے ہیں۔ زمانہ قبل ازتاریخ سے اس کی ترکاری کو پکا کر کھانے کا رواج ہے اور قدیم لوگ اسے مختلف طریقوں سے کھاتے تھے۔ اس کی پھلیاں ہوتی ہیں جن میں سے چنے کے برابر گول سبز دانے نکلتے ہیں۔ یہی دانے پکا کر سالن کے طور پر بھون کر بھی کھائے جاتے ہیں۔ اس کو چاولوں میں ڈال کر مٹر پلاو بھی پکایا جاتا ہے جو کہ غذائیت کے لحاظ سے کسی طرح کم نہیں۔ مٹر گوشت آلو مٹر‘ مٹر قیمہ اور دیگر قسم کے مختلف سالن پکا کر کام و دہن کی تواضع کی جاتی ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.

bullet force multiplayer unblocked shell shockers unblocked