سات ایسی غلطیاں جو پیٹ خراب کرتی ہیں

اس تحریر میں ہم سات ایسی غلطیوں کے بارے میں جانیں گے جن کی وجہ سے ہمیں بدہضمی قبض گیس جگر کی کمزوری اور ہمارے نظام ہاضمہ سے جڑے بہت سے مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے ممکن ہے کہ آپ بھی ان غلطیوں میں سے کچھ غلطیاں کررہے ہوں گے اور یہ بھی ممکن ہے کہ جانے انجانے وہ ساری غلطیاں ہی کر رہے ہوں جن کا ذکر کیا جارہا ہے ان غلطیوں کی وجہ سے آپ کا پورا ڈائیجسٹو سسٹم ڈسٹرب ہو رہا ہے ۔ آئندہ آپ یہ غلطیاں نہ کرنے کی ٹھان لیجئے۔غلطی نمبر 1: صبح کے ناشتے میں چینی سے بنی ہوئی چیزوں کا استعمال کرنا، جن میں چائے بسکٹ کیک اور چینی سے بنی تمام اشیاء شامل ہیں یہ تمام اشیاء پیٹ میں جانے کے بعد گیس پیدا کرتی ہیں اس کے علاوہ یہ چیزیں ہمارے جگر اور لبلبے یعنی کہ پنکریاز پر بھی بہت ہی برا اثر ڈالتی ہیں اسی لئے ہمیں پوری کوشش کرنی چاہئے کہ ہم اپنی صبح کا آغاز نیچرل ڈائیٹ سے کریں شاید آپ یہ بات نہیں جانتے ہوں گے

کہ ہمارے جسم پر سب سے زیادہ اثر صبح کے ناشتے کا ہی ہوتا ہے۔غلطی نمبر 2: کھانے کے فورا بعد نہانا :ہم لوگ جیسے ہی کھانا کھا کر فارغ ہوتے ہیں تو ہمارے جسم میں ساراد دوران خ و ن معدے کی طرف ہوجاتا ہے تا کہ غذا کو جلدی سے ہضم کر کے خ و ن کا حصہ بنایا جاسکے لیکن اگر ہم کھانے کے فورا بعد نہانے چلے جاتے ہیں تو ہماری باڈی ٹھنڈی ہوجاتی ہے اور ہمارا جسم اپنا قدرتی درجہ حرارت بحال رکھنے کے لئے خ و ن پوری باڈی میں سپلائی کرتا ہے اسی لئے ہمارا جسم غذا کو ہضم کرنے کی بجائے اپنا درجہ حرارت بحال کرنے میں مصروف ہوجاتا ہے اور ہمارا نظام ہاضمہ بہت سست پڑ جاتا ہے اسی لئے کوشش کر کے یا تو کھانے سے پہلے نہا لیں یا پھر کھانا کھانے کے ایک سے دو گھنٹے بعد ہی نہائیں ۔غلطی نمبر 3:تیز تیز کھانا ،جب ہم کھانا تیز تیز کھاتے ہیں تو کھانا ٹھیک سے چباتے نہیں ہیں اور تیزی میں ہم ضرورت سے زیادہ کھا لیتے ہیں کھانا پیٹ میں جاکر پھول جاتا ہے

لیکن ہم پہلے ہی پیٹ بھر کر کھا چکے ہوتے ہیں جس کی وجہ سے ہمارا معدہ جام ہوجاتا ہے اور کھانے کو ہضم کرنے کا عمل بہت ہی زیادہ سست ہوجاتا ہے اسی لئے کھانا ہمیشہ آہستہ آہستہ اور چبا چبا کر کھانا چاہئے۔ کھانے کو ہمیشہ پینا چاہئے اور پانی کو ہمیشہ کھانا چاہئے اب اس بات کو اچھی طرح سے سمجھ لیجئے کہ اگر ہم کھانے کو جتنا زیادہ چبائیں گے وہ باریک ہو کر لیکوئیڈ بن جائے گا اور کھانا فوری طور پر ہضم ہو کر ہمارے جسم کا حصہ بھی بن جائے گا حکیم لقمان فرماتے ہیں کہ اگر صحت مند رہنا چاہتے ہو تو کبھی بھی دانتوں کا کام آنتوں سے نہیں لینا چاہئے اور پانی کو کھانے سے مراد ہے کہ ہمیشہ تین سانس میں پانی پینا چاہئے اور پانی کو گھونٹ گھونٹ کر کے پورے منہ میں گھما گھما کر پینا چاہئے اس کا سب سے بڑا فائدہ یہ ہوتا ہے کہ ہمارے منہ میں موجود سلائیوا کی زیادہ سے زیادہ مقدار ہمارے معدے میں جاتی ہے اور ہماری غذا بڑی تیزی سے ہضم ہوجاتی ہے کیونکہ ہمارے سلائیوا میں وہ تمام اینزائمز ہوتے ہیں جو غذا کو ہضم کرنے میں ہماری مدد کرتے ہیں ۔غلطی نمبر 4: کھانے کے فورا بعد لیٹنا۔غلطی نمبر 5:نان ویج غذاؤں کے ساتھ سبزی نہ کھانا۔غلطی نمبر 6:کھانے کےفورا بعد پانی پینا۔غلطی نمبر7:کھانا صحیح سے نہ چبانا۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.