سادہ پانی میں اس عام سی چیز سے پھیپھڑوں کی مکمل صفائی

پھیپھڑے ہمارے نظام تنفس کا اہم جزو ہیں۔ یہ آکسیجن کو ہمارے جسم میں لے جانے اور کاربن ڈائی آکسائیڈ کو خارج کرنے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔ اس وجہ سے ان کو صحت مند رکھنا بھِی بہت ضروری ہے۔ ہمارے پھیپھڑوں میں جمع ہونے والے فاضل مادے ہماری صحت کے لیے بہت نقصان دہ ثابت ہوتے ہیں۔ہمارے پھیپھڑوں میں ٹاکسن کی زیادہ مقدار جمع ہو جاتی ہے۔ جس سے دمہ اور سانس کی بیماریوں جیسے مسائل سامنے آتے ہیں۔ آج ہم آپ کو اس تحریر میں پھیپھڑوں کی صفائی کے بارے میں آسان گھریلو نسخے بتا نے جا رہے ہیں۔آپ ادرک کا استعمال کر کے اپنے پھیپھڑوں کو صحت مند رکھ سکتے ہیں۔ ادرک کے استعمال سے نظام دوران خون بہتر ہوتا ہے۔ پھیپھڑوں کو کنیسر جیسے موذی مرض سے محفوظ رکھنے کے لیے ادرک کا استعمال کریں۔تم باکو نوشی کی وجہ سے پھیپھڑوں میں رہریلے مادے جمع ہو جاتے ہیں۔ اس لیے ادرک کا استعمال فائدہ مند ثابت ہوتا ہے۔اس کے لیے روزانہ ایک کپ ادرک کا قہوہ پئیں۔ اس میں آدھے لیموں کا رس ڈال لیں تو یہ بہت فائدہ مند ثابت ہو گا۔پودینہ آپ کے پھیپھڑوں کو صاف کرنے کےلیے قدرتی طور پر فائدہ مند ثابت ہوتا ہے۔ پودینے کے اندر میتھانول پایا جاتا ہے

جو آپ کے نظام تنفس کو بہتر کرتا ہے۔ اور یہ پھیپھڑوں سے پیدا ہونے والی بیماریوں کو ختم کرنے میں مدد گار ثابت ہوتا ہے۔پودینے کے چار سے پانچ پتے آپ سلاد کے طور پر استعمال کریں۔ اس کے علاوہ پودنیے کا قہبو ہ بنا کر بھی استعمال کر سکتے ہیں جیسے ادرک کا قہوہ۔ دو ہفتوں تک لگا تارادرک اور پودینے کا قہوہ پینے سے آپ کے پھیپھڑوں کی صفائی ہو جاے گی۔لیموں پانی اپ کے پھیپھڑوں کو صاف کرنے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔ اس کے لیے اپ ایک گلاس پانی میں ایک لیموں کا رس نچوڑ لیں اور روزانہ پئیں۔ اس سے آپ کے گردے اور پھیپھڑے دونوں صاف ہو جائیں گے۔لیموں پانی کا استعمال بھی 2ہفتوں تک کریں ۔گاجر کا جوس آپ کے جسم میں خون کی کمی کو پورا کرتا ہے۔ اس کے علاوہ پھیپھڑوں کی صفائی میں بھی نمایاں ثابت ہوتا ہے۔ گاجر کا جوس استعمال کرکے آپ اپنے جسم میں موجود فاضل مادوں کو ختم کر سکتےہیں۔روزانہ ایک گلاس گاجر کا جوس استعمال کریں۔ادرک ایک گوشت دار مسالا ہے جو بھوری رنگ کا ہوتا ہے۔

اس کی تیز رفتار بو اور بہت گرم ذائقہ ہے۔ یہ بہت سی عام بیماریوں کو ٹھیک کرنے کے لئے مفید ہے اور گھریلو علاج کے لئے ہندوستان میں وسیع پیمانے پر استعمال ہوتا ہے۔ادرک کو چائے بنانے میں بھی استعمال کیا جاسکتا ہے جس میں وٹامن سی اور میگنیشیم جیسے بہت سے وٹامنز اور معدنیات ہوتے ہیں۔ ادرک کی چائے کو لیموں کا رس ، شہد یا مرچ کے ساتھ لیا جاسکتا ہے۔ ادرک کی چائے کو ہندی میں ادرک چائے ، تیلگو میں اللم چائے اور تمل میں انجی چائے بھی کہا جاتا ہے۔یہ آرام دہ اعصاب میں مدد مل سکتی ہے۔ یہ قے ، سر درد اور مہاسے کو روکنے کے لئے مفید ہے۔ طویل سفر کے بعد جیٹ وقفے سے جان چھڑانا بھی مفید ہے۔یہ مناسب ہاضمہ میں اہم کردار ادا کرتا ہے ، جو بالواسطہ غذا جذب کو بہتر بناتا ہے اور پیٹ کے درد سے بچتا ہے۔ اس سے آپ کو غیر ضروری بلیچنگ سے دور رکھنے میں بھی مدد مل سکتی ہے۔ اس سے گیسٹرک ایسڈ جاری کرکے آپ کی بھوک میں بہتری آتی ہے۔یہ جوڑوں کی سوزش کے علاج کے لئے مفید ہے ، جیسے رمیٹی سندشوت۔ یہ آپ کو تھکاوٹ ، سوجن اور گلے کے پٹھوں اور جوڑوں کی پفنیس سے نجات دلانے میں مدد مل سکتی ہے۔ درد ، جلن اور احساس کھجلی سے بچنے کے لئے کھلاڑیوں کے پاؤں کی حالت میں ادرک کی چائے کا مشورہ دیا جاتا ہے۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمین

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.

bullet force multiplayer unblocked shell shockers unblocked