ناخن کی فنگس کا علاج۔ ناخن کا ٹوٹنا ، ناخن میں خوشکی ، ناخنوں کا کا لا ہو نا، نا خن خورہ ۔ پانی سے خراب ناخنوں کا علاج۔

یہ بیماری جسے اونکومیکوسیز بھی کہا جاتا ہے، ذیادہ تر بوڑھے لوگوں کو متاثر کرتی ہے۔ ناخن کو اثرانداز کرنے والی پھُپھُوندی کئی اقسام کی ہو سکتی ہے جیسا کہ یاست، مولڈز وغیرہ لیکن سب سے ذیادہ پائی جانے والی پھُپھُوندی کا نام ڈرماٹوفائٹ ہے جو ذیادہ تر انفیکشن کا باعث بنتی ہے۔ ناخن کے یہ انفیکشن ناخن کے نیچے سفید اور پیلے دھبوں کی شکل میں نمودار ہوتے ہیں اور اگر اس کا علاج نہ کرایا جائے تو یہ پورے ناخن کو اپنی گرفت میں لے کر ناخن کے سخت ہو کر گرنے کا باعث بھی بن سکتی ہے۔ علامات میں ناخن سے گندی بدبو آنا، سخت اور اکھڑتا ہوا ناخن اور ناخن کا پیلا یا بھورا ہو جانا شامل ہیں۔ خدشاتی عناصر میں قوت مدافعت کی کمی، بڑھتی ہوئی عمر، ذیادہ پسینہ آنا، ناخنوں کے انفیکشن اور گندی جگہ پر ننگے پاوں چلنا ذیادہ اہم ہیں۔

علاوہ ازیں، شوگر کے مریضوں میں ٹانگوں تک خون کی کم رسائی ان افراد میں اس مرض کی ذیادتی کا باعث ہے۔ علاج میں بآسانی دستیاب سے لیکر ڈاکٹر کی رسید پر والی ادویات تک تمام آپشن موجود ہیں۔ اپنے ہاتھوں اور پاوں کی باقاعدہ صفائی ناخنوں کو اچھے سے تراشا جائے اور ٹیڑھے میڑے کونے کھدرے سے پرہیز کیا جائے ناخن تراش کو اچھے سے صاف کیا جائے بند جوتے پہنتے ہوئے جرابیں لازمی پہنی جائیں اگر کسی سیلون یا پارلر سے ناخن کا علاج کرایا جائے تو اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ تمام آلات صاف ستھرے ہیں اس مرض کے دوران ورم، ان کی موٹائی بڑھنے، زنگت بدلنا اور انگلیوں میں درد وغیرہ کا تجربہ ہوتا ہے. شتحریر جاری ہے‎ ایسا عام طور پر پیروں کی صفائی کا خیال نہ رکھنا، جسمانی دفاعی نظام میں کمزوری، پیروں کا بہت زیادہ نم جگہ پر رہنا یا دوران خون کی ناقص گردش کے باعث ہوتا ہے

تاہم اچھی بات یہ ہے کہ آپ کے کچن میں ہی اس کا علاج بھی موجود ہے. بیکنگ سوڈا بیکنگ سوڈا پیروں میں جذب ہوجانے والی نمی کو خشک کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے جبکہ یہ پیوں کی بو سے نجات کے ساتھ پیروں کے ناخنوں کے فنگس کا علاج بھی کرتی ہے. اس کے لیے بیکنگ سوڈا کو پانی میں ملا کر پیسٹ بنائیں اور اسے متاثرہ حصے پر لگادیں. اس پیسٹ کو 10 منٹ تک لگا رہنے دیں اور پھر دھولیں. اس کے علاوہ پانی کی بالٹی میں بیکنگ سوڈا کو ملائیں اور پیروں کو اس میں ڈبو دیں.جئی کا دلیا پیروں کے ناخنوں کے اس مسئلے کا یہ علاج بھی موثر ہے، ایک بڑے ٹب کا دو تہائی حصہ پانی سے بھریں اور اس میں جئی کے دلیے کو مکس کرلیں. ایک گھنٹے بعد اس میں پیروں کو آدھے گھنٹے یا اس سے زائد وقت تک کے لیے ڈبو دیں. سفید سرکہ سرکہ معمولی سی تیزابی خاصیت کا ہوتا ہے، جو اس فنگس سے نجات کے لیے جلد میں ہائیڈروجن کا توازن بحال کرتا ہے، اسی طرح یہ فنگس کو پھیلنے سے روکتا ہے جبکہ بیکٹریا وغیرہ کو مارتا ہے

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

bullet force multiplayer unblocked shell shockers unblocked