نیک اولاد کی 3 نشانیاں

اس تحریر میں کچھ نشانیاں یا علامات بتائی جارہی ہیں جس کے ذریعے سے آپ یہ جان سکتے ہیں کہ اولاد نیک ہے

یا نہیں تو اگراس میں یہ تین نشانیاں آپ دیکھ لیں تو سمجھ جائیں کہ آپ کی اولاد نیک ہے اور اگر آپ یہ جاننا چاہتے ہیں کہ میں خود بطورِ اولاد اپنے ماں باپ کے لئے نیک اولاد ہوں یا نہیں تب بھی یہ نشانیاں اپنے اندر آپ دیکھ لیجئے اگر یہ تین نشانیاں آپ کے اندر ہیں تو آپ نیک ہیں اور یہ نبی کائنات صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم کے فرامین کی وضاحت ہے سب سے پہلی نشانی جو نبی اس تحریر میں کچھ نشانیاں یا علامات بتائی جارہی ہیں جس کے ذریعے سے آپ یہ جان سکتے ہیں کہ اولاد نیک ہے یا نہیں تو اگراس میں یہ تین نشانیاں آپ دیکھ لیں تو سمجھ جائیں کہ آپ کی اولاد نیک ہے اور اگر آپ یہ جاننا چاہتے ہیں کہ میں خود بطورِ اولاد اپنے ماں باپ کے لئے نیک اولاد ہوں یا نہیں تب بھی یہ نشانیاں اپنے اندر آپ دیکھ لیجئے اگر یہ تین نشانیاں آپ کے اندر ہیں

تو آپ نیک ہیں اور یہ نبی کائنات صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم کے فرامین کی وضاحت ہے سب سے پہلی نشانی جو نبی صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم نے نیک اولاد کی بتائی ہے فرمایا ایسی اولاد جو اپنے والدین کو دعاؤں میں کبھی نہیں بھولتی دعاؤں میں ہمیشہ اپنے والدین کو یاد رکھنے والے نیک اولاد ہوتے ہیں چاہے وہ بچے ہوں یا بچیاں ہوں یہ نیک لوگ ہیں جو اپنے والدین کو اپنی دعاؤں میں کبھی نہیں بھولتے نہ زندگی میں اور نہ ہی مرنے کے بعد اور اپنے والدین کے لئے دعا کرنا یہ خود اولاد کے لئے بھی فائدہ مند ہے یہ بھی درجات میں بلندی کا سبب نیکیوں میں اضافے کا باعث بنتا ہے اور مصیبت سے خود کو بچانے والی بات ہے یا اپنی ماں کے لئے اپنے باپ کے لئے دعائیں کریں اور زیادہ سے زیادہ دعائیں کریں والدین کے ساتھ حسن سلوک رزق اور عمر میں اضافے کا سبب ہے چنانچہ حضرت انس رضی اللہ تعالیٰ عنہ فرماتے ہیں کہ حضور اقدس صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا جو شخص یہ چاہتا ہے کہ اللہ اس کی عمر دراز کرے اور رزق میں اضافہ فرمائیں تو اسے چاہئے کہ وہ اپنے والدین کے ساتھ بھلائی کا معاملہ کرے اور رشتہ داروں کے ساتھ صلہ رحمی کرے اور یہ رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم کا فرمان بھی ہے

جس کو بخاری نے نقل کیا ہے آپ فرماتے ہیں کہ نیک اولاد اپنے والدین کے لئے دعا کیا کرتے ہیں ۔دوسری نشانی نیک ترین نشانی نیک اولاد کی کیا ہے وہ یہ ہے کہ وہ اپنے والدین کی خدمت کو اپنی دنیا اور آخرت کی کامیابی کا راز سمجھتے ہیں اب جو سمجھتے ہیں کہ ہمارے والدین کی خدمت اگر دونوں والدین حیات ہیں تو الحمد للہ اگر دونوں میں سے کوئی ایک زندہ ہے ماں ہے یا باپ ہے ان کی خدمت دنیا اور آخرت دونوں جہاں کی کامیابی کا سب سے بڑا راز ہے اور سب سے بڑا سبب ہے سیدنا حارثہ بن نعمان رضی اللہ تعالیٰ عنہ اور یہ اس وقت کی بات ہے جب اللہ کے رسول صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم معراج پر گئے اور آپ کو جنت بھی دکھائی گئی تو آپ نے جنت میں کیا سنا کہ وہاں پر قرآن مجید کی تلاوت کی آواز آرہی ہے تو آپ نے جب پوچھا تو آپ کو بتایا گیا کہ یہ آپ کے صحابی حارثہ بن نعمان رضی اللہ تعالیٰ عنہ ہیں جو اس وقت دنیا میں زمین پر وہ قرآن پڑھ رہے ہیں اور ان کی قرآن پڑھنے کی تلاوت کرنے کی آواز جنت میں سنائی دے رہی ہے اور وجہ کیا ہے کہ وہ سب سے زیادہ لوگوں میں اپنی ماں سے محبت کرنے والے ہیں وہ اپنی ماں سے محبت اپنی ماں کی خدمت دنیا میں سب سے زیادہ کرتے ہیں اور اس محبت کا اور خدمت گزاری کا صلہ اللہ تعالیٰ نے یہ دیا ہے کہ وہ قرآن مجید کی تلاوت دنیا میں کررہے ہیں اور ان کی آواز جنت میں گونچ رہی ہے ۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمینصلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم نے نیک اولاد کی بتائی ہے فرمایا ایسی اولاد جو اپنے والدین کو دعاؤں میں کبھی نہیں بھولتی دعاؤں میں ہمیشہ اپنے والدین کو یاد رکھنے والے نیک اولاد ہوتے ہیں

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.

beylikdüzü escort bahçeşehir escort