پیروں پر جوتے کیوجہ سے ہونیوالے زخموں کا علاج کرنے کے بہترین گھریلو طریقے

کیاآپ جوتے کے کاٹنے کے خوف سے خوفزدہ ہیں تو پریشان نہ ہوں ہم سب یہ بات جانتے ہیں کہ یہ کتنا مایوس کن ہوسکتا ہے ۔ آج ہم آپ کو جوتے کے کاٹنے کے علاج میں مدد فراہم کرنے والے چند آزمائے گئے علاج کے بارے میں بتائیں گے ۔ اس سے پہلے ہم یہ بتائیں گے کہ جوتے کے کاٹنے کی کیا وجوہات ہوسکتی ہیں۔ جوتے کی رگڑ آپ کے پیروں میں چھالوں سوجن کی وجہ بنتا ہے جوتوں کے کاٹنے س ےبہت تکلیف ہوسکتی ہے ۔ جب آپ چلتے ہیں یا کھڑے ہوتے ہیں یہ تکلیف دیتے ہیں اس کے کاٹنے کی کیا وجہ ہے اس کی بنیادی وجہ عام طور پر لوگوں کے پیروں کے سائز پر غور کیے بغیر جوتے خریدنا ہے انس ے پاؤں جوتے کیساتھ رگڑ سکتے ہیں۔

اس کے نتیجے میں پاؤں میں سوجن چھالے اور داغ بن جاتے ہیں۔ بعض اوقات آپ کے پیروں سے پسینا بھی جوتے کے چمڑے کے خلاف سبب بن سکتا ہے خواتین مردوں کے مقابلے میں جوتا کاٹنے کا زیادہ شکار ہوتی ہیں۔ کیونکہ وہ بہت تنگ جوتے پہنتی ہیں جو ان کے پیروں پر چھالے اور داغ چھوڑ دیتے ہیں۔ کچھ گھریلو علاج کرسکتے ہیں جو بہت میسر ہیں نمبر ایک ایلو ویرا جس میں شفاء بخش اور سوزش کی خصوصیات ہیں اس سے آپ کے پیروں میں چھالے کم کرنے میں مدد مل سکتی ہے ۔ اس میں گلوکو مینن ہوتا ہے جو آپ کو تیزی سے آرام بخشتا ہے ۔ ایک چائے کا چمچ ایلوویرا جیل لیں اس جگہ لگائیں جہاں آپ کے پیروں پر چھالے ہوں۔ اس کو تھوڑی دیر کیلئے چھوڑ دیں اور پانی سے دھولیں اس کو دن میں دوبار کرسکتے ہیں۔ زیتون کا تیل جس میں بائیوٹک مرکبات سوزش کی خصوصیات کو ظاہر کرتی ہیں ۔یہ جوتا کاٹنے کے گرد سوزش کو کم کرنے میں مدد کرتے ہیں زیتون کے تیل کے دو سے تین قطروں کے ساتھ بادام کے تیل کے ایک سے دو قطرے ملائیں اور اسے اپنے پیروں پر لگائیں

اس علاج کو دن میں دو بار دھرائیں جب تک سوزش کم نہ ہو ۔ ٹوتھ پیسٹ میں مینتھول ہوتا جو اینل جیسک کے طور پر کام کرتا ہے اور جوتا کاٹنے کی وجہ سے ہونے والے درد کو ختم کرتا ہے ۔ ایک پیالی میں ایک چمچ ٹوتھ پیسٹ نکالیں اور روئی کی مدد سے اسے اس جگہ لگائیں جہاں جوتے کے کاٹنے کیوجہ سے درد ہو پھر سوکھنے دیں جب سوکھ جائے تو پانی سے اچھی دھو لیں آپ اس علاج کو روزانہ ایک سے دو بار استعمال کرسکتے ہیں۔ شہد سوزش اور اینٹی بیکٹریل خصوصیات کو ظاہر کرتا ہے ۔ جو جوتے کے کاٹنے کے گرد سوزش کو کم کرنے میں مدد کرتا ہے ۔ اس کی یہ خصوصیات مزید انفیکشن سے بھی بچاتی ہیں۔

ایک پیالی میں ایک چمچ شہد نکالیں اور ایک جراثیم سے پاک روئی لیکر شہد میں ڈالیں اور پھر روئی کو متاثرہ حصے پر رکھیں اسے روزانہ دن میں تین سے چار بار دھرائیں ۔ نمبر 5نیم اور ہلدی نیم کے پتے اور ہلدی سوزش اور انفیکشن کو کم کرنے میں مدد کرسکتے ہیں ایک مٹھی نیم کے پتے لیں اور ایک چمچ ہلدی پاؤڈر لیں گاڑھا پیسٹ بنانے کیلئے اسے بلینڈر میں ڈال کر چند قطرے پانی شامل کریں اور اسے بلینڈ کرلیں اس پیسٹ کو جوتے کے کاٹنے پر لگائیں اسے اس وقت تک چھوڑدیں جب تک یہ سوکھ نہ جائے پھر پانی سے دھو لیں اسے روزانہ دن میں دوبار کریں یہ جوتے کے کاٹنے کے درد کرنے کے آسان گھریلو علاج جسے استعمال کرکے آپ تکالیف سے بچ سکتے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *