پیٹ کی چربی تیزی سے کم کرنے کیلئے اثردار ڈرنک خالی پیٹ لینے سے چمکتاری نتائج

موٹاپا انسانی جسم کی ایک طبعی حالت ہے جس میں جسم پر چربی چڑھ جاتی ہے، وزن زیادہ ہو جاتا ہے اور توند نکل آتی ہے۔ماہرین آج تک اس سوال کا تسلی بخش جواب نہیں دے سکے کہ بعض انسان کیوں موٹے ہوتے ہیں؟ انسان کے موٹے ہونے یا ان کے وزن بڑھنے کے حوالے سے کئی تحقیقات کی جاچکی ہیں۔ہر بارکوئی نہ کوئی نیا سبب سامنے آتا ہے۔

زیادہ تر لوگ یہی سمجھتے ہیں کہ انسان کا طرز زندگی، کھانے پینے کا شوق ہر وقت بیٹھے رہنے، سوتے رہنے اور ورزش نہ کرنے کی وجہ سے وزن بڑھتا ہے اور وہ موٹاپے کا شکار ہوجاتا ہے۔ تاہم یہ بھی دیکھا گیا ہے کہ دنیا میں بعض افراد ایسے بھی ہیں جو ہر طرح کی غذائیں بھی کھاتے ہیں، زیادہ وقت بیٹھے رہنے سمیت کوئی ایکسر سائز بھی نہیں کرتے لیکن پھر بھی وہ موٹاپے کا شکار نہیں ہوتے۔موٹاپا کی وجہ سے یقیناً کئی طرح کے مسائل درپیش آتے ہیں۔ ترقی پذیر ممالک سمیت ترقی یافتہ ممالک میں لوگوں کے مرنے کا ایک سبب موٹاپا بھی ہے۔ ایک اندازے کے مطابق اس وقت دنیا بھر میں 70 فیصد افراد موٹاپا یا اضافی وزن کا شکار ہیں۔ ایسے افراد موٹاپا یا اپنا وزن کم کرنے کے لیے جہاں زیادہ وقت بھوکے رہنے کو ترجیح دیتے ہیں وہیں وہ مختلف ایکسرسائزز بھی کرتے رہتے ہیں۔

یہ بھی دیکھا گیا ہے کہ بعض افراد غذا کم کھانے اورایکسرسائز کرنے کے با وجود موٹاپے کا شکار ہوتے ہیں۔ سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ ایسا کیوں ہوتا ہے اور انسان موٹا کیسے اور کن چیزوں سے ہوتا ہے؟ہر انسان کا جسم مختلف ہوتا ہے۔ ہر کسی کے جسم میں غذائیت کو جذب کرنے اور غذا کو مکمل جسم میں تقسیم کرنے کی اہلیت بھی منفرد ہوتی ہے۔ ہم سب ہی یہ بات جانتے ہیں کہ وزن کیسے بڑھتا ہے۔ جب ہم جتنی کیلوریز ہمیں چاہئیں اس سے زیادہ کیلوریز کھانے لگتے ہیں تو وزن بڑھنے لگتا ہے لیکن ہم ضرورت سے زیادہ کھانا کیوں شروع کردیتے ہیں؟ کیوںکہ کبھی کبھی ایسا ہوتا ہے کہ اچانک چاکلیٹ یا کیک جیسی بہت زیادہ کیلوریز والی چیزیں کھانے کی شدید طلب محسوس ہوتی ہے۔حالانکہ ہمیں معلوم ہوتا ہے کہ تھوڑی دیر بعد ہمیں پچھتاوا ہوگا۔ موٹاپا ہمیشہ زیادہ کھانے کے نتیجے کے عمل میں آتا ہے۔

(اگر کوئی بیماری نہ ہو)۔ جو کھانا ہم کھاتے ہیں اگر اس کی توانائی کی مقدار روزانہ استعمال ہونے والی توانائی سے زیادہ ہو تو یہ فالتو مقدار ہمارے جسم میں چکنائی کی شکل میں جمع ہوتی رہتی ہے اور وزن میں اضافے کا باعث بنتی ہے۔ اس لیے اگر اس کے ساتھ ساتھ مناسب ورزش کرلی جائے تو بہتر ہے۔آج آپ کوپیٹ کی چربی کرنے کی  ریمڈی بتا رہے ہیں اس ریمڈی کو بنانے کیلئے ہمیں ضرورت ہوگی سب سے پہلے زیرہ ، لیموں،شہد اور ایک گلاس نیم گرم پانی لینا ہے ۔ آپ دو چمچ زیرہ کے ایک گلاس پانی میں ڈال کر ہلکی آنچ پر بوائل کرلیں پھر اسے فلٹر کرلیں اس میں آدھے لیموں کا رس شامل کرکے دوچمچ شہد ڈال لیں اچھی طرح مکس کرلیں آپ کی ڈرنک تیار ہوجائیگی ۔ آپ روزانہ صبح خالی پیٹ ایک گلاس پئیں۔ انشاء اللہ پیٹ کی چربی کم ہوجائیگی ۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.

bullet force multiplayer unblocked shell shockers unblocked