کیا آپ کو پتہ ہے 95 فیصد لوگ سونف غلط طریقے سے استعمال کرتے ہیں سونف کھانے کا صحیح طریقہ اور علاج

سونف بلاشبہ ہماری صحت کیلئے اللہ تعالیٰ کی بہت بڑی نعمت ہے اس کے استعمال سے بڑی بڑی بیماریاں چٹکیوں میں ٹھیک ہوجاتی ہیں۔ لیکن زیادہ تر لوگ نہ تو سونف کو استعمال کرنے کا صحیح طریقہ جانتے ہیں نہ ہی اس کے فوائد اور نقصانات سے واقف ہیں۔ نا ہی جانتے ہیں کہ کونسی سونف قدرتی منرلز سے بھرپور ہے اور کونسی سونف سوائے بھوسے کے کچھ نہیں۔

اگر آپ چند روپیوں دماغ کو کمپیوٹر کی طرح تیز اور معدے کے تمام امراض سے چھٹکارہ چاہتے ہیں تو اس کیلئے سونف سے بہتر اور کوئی چیز نہیں ۔ خالص سونف کی ایک چھوٹی چمچ ہر کھانے کے بعد چبانے سے معدے کی گیس ،تیزابیت ، اپھارہ اور قبض جیسے امراض ٹھیک ہوجاتی ہیں۔ اگر آپ کا معدہ کمزور ہے کھانا ہضم نہیں ہوتا اور کھٹے ڈکار آتے ہیں تو اس کیلئے ایک چھوٹی چمچ سونف اتنے ہی گڑ کے ساتھ ملا کر کھانا کھانے کے بعد استعمال کریں ۔ یہ علاج فوری طور پر معدے کی گندی رطوبتوں کو صاف کرکے ناصرف معدے کو مضبوط بنائے گا اور ہاضمے کے نظام کو بھی تیز کرے گا۔

جبکہ دماغی کمزوری کو دور کرنے اور نظر کو تیز کرنے کیلئے سونف ،مصری ، بادام برابر مقدار میں پیس کر سفوف بنا لیں ۔ اس سفوف کی ایک بڑی چمچ ، ایک گلاس نیم گرم دودھ کے ساتھ مسلسل 60دن تک استعمال کریں آپ کی نظر بھی تیز ہوگی اور دماغ بھی کمپیوٹر کی طرح کام کرے گا ۔ آخر میں جو سونف کا استعمال بتائیں گے وہ بہت اثردار اور قیمتی علاج ہے اس کے استعمال سے خواتین میں ہارمونز کا بگاڑ پیریڈز کی بے قاعدگی اور تکلیف فیڈنگ کے دوران دودھ کی کمی جیسے مسائل فوراً ٹھیک ہوجائیں گے ۔ اس کا استعمال جگر معدے اور گردوں کیلئے بہت مفید ہے ۔

گردے اور مثانے کی پتھری ٹوٹ کر خارج ہوجاتی ہے ۔ سینے کی بلغم ،سردرد اور اعصابی کمزوری کیلئے بھی سونف کا استعمال ضرور کریں ۔ اس کے علاوہ پیٹ درد ، موشن ، بدہضمی تیزابیت اور گیس کیلئے بہترین علاج ہے ۔ آپ نے دو لیٹر پانی میں دوچمچ سونف ، تین عدد سبز الائچی اور تقریباً دس گرام گڑ ڈال کر پانی کو ابال لیں جب ایک ابال آجائے تو آنچ ہلکی کردیں اور ڈھکن کو بند کرکے پانی کو آدھا ہونے تک بوائل کریں اس ایک لیٹر پانی کو دن میں دو بار استعمال کریں ۔چھوٹے بچوں کو ایک ایک چمچ تین بار استعمال کرائیں ناقابل یقین فوائد حاصل ہونگے ۔ اگر ہائی بلڈپریشر کے مریض ہیں تو سونف کا استعمال نہ کریں۔ پریگننسی کے دوران سونف کا استعمال خطرناک ہوسکتا ہے اس لیے اس سے پرہیز کریں اور ایسے مریض جو مرگی میں مبتلا ہیں وہ بھی سونف کے استعمال سے گریز کریں۔ سونف کے منرلز ضائع ہوجاتے ہیں اس لیے تازی سونف خریدیں اس کا رنگ سبز ہوتا ہے لیکن دکاندار پرانے سٹاک پر بھی رنگ چڑھا دیتا ہے اس لیے محتاط رہیں

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.